Tuesday, March 5, 2013

II مینڈک کہانی


کنویں کا مینڈک کنویں میں رہ کر کبھی بھی مطمئن  نہیں رہا۔ باہر کی دنیا کی خبر نا ہونے کے باوجود اسکوہمیشہ ایک کمی سی محسوس ہوتی تھی۔ وہ کچھ کرنا چاہتا تھا۔ اس نیلے آسمان کو کچھ قریب سے دیکھنا چاہتا تھا۔ اسکی ایسی باتیں باقی مینڈکوں کو ہمیشہ مزاق ہی لگتی تھی پر اسے یقین تھا کہ وہ کچھ کر سکتی ہے۔ اس کے دیل میں ہمیشہ یہ خیال آتا تھا کہ اس کنویں سے آگے بھی کچھ ہے۔ کچھ بڑا اور کچھ بہتر۔ باقی مینڈک یہ بات کبھی نہیں سمجھ پاتے تھے۔

اسی طرح یہ مینڈک کسی دن اکیلا بیٹھا اپنے کنویں کو بہتر بنانے کی تراکیب سوچھ رہا تھا کہ اچانک باہر سے ایک مینڈک کنویں میں آ گرا۔ پوچھنے پر پتا چلا کہ وہ مینڈک باہر کی دنیا سے آیا ہے۔ سب نے پہلے تو ماننے سے انکار کر دیا کہ کنویں سے باہر بھی کوئی دنیا ہے۔ ان کے مطابق کنواں ہی انکی دنیا تھی۔ اس سے بڑا اور بہتر کچھ نہین ہو سکتا۔ باقی سب نے ماننے سے صاف انکار کر دیا پر اس مینڈک کو باہر کی دنیا کا سن کر بہت خوشی ہوئی۔ اسے خود پر یقین ہو گیا۔ اسے اپنا آپ یک دم باقی مینڈکوں سے بہتر لگنے لگا۔

باہر سے آئے ہوئے مینڈک سے سب مینڈک بہت دن دنیا کے بارے مین طرح طرح کے سوال کرتے رہے تاکہ اس دنیا کو بہتر طریقے سے جان سکیں۔ باقی مینڈکوں کو پھر بھی یقین نہ آیا کہ اتنی روشن اور بڑی جگہ بھی کوئی ہو سکتی ہے مگر اس مینڈک کو عجیب سی فتح کا احساس ہونے لگا۔ اسکو باہر کی دنیا کچھ کچھ ابھی تصوراتی دنیا کے قریب قریب لگنے لگی۔ اسے بہت خوشی ہوئی کہ اسکے خواب حقیقت سے بہت قریب ہیں۔ اسے اپنی قابلیت پر اور یقین ہو گیا۔ اسنے جیسے خود کو پہچان لیا ہو۔

باہر کی دنیا کا مینڈک تو کنواں چھوڑ کر چلا گیا پر اس کنویں کے مینڈک کو وہ پہلے سے کہیں زیادہ بے چین کر گیا۔ اب اسنے خواب دیکھنے سے زیادا یہ سوچھنا شروع کردیا کہ وہ کیوں اس باہر کی دنیا کا حصہ نہیں ہے۔ وہ کیوں اس کنویں میں رہتا ہے؟ اسمیں ایسی کیا کمی ہے جو وہ باہر سے آنے والا مینڈک کس طرح اس سے بہتر تھا۔ اسکا زندگی مزید بےچین ہو گئی اور اسی طرح کنویں کے ینڈک نے اس دینا کو قریب سے جانچنے کا فیصلہ کر لیا جو اسکی تصوراتی دنیا سے بہت حد تک قریب تھی


Kunwein ka maindak kunwein me reh kar kabhi bhi mutmainn nahi raha. Bahar ki dunya ki khabar na honey k bawajood usko humesha aik kumi si mehsoos hoti thi. Wo kuch karna chahta tha. Us neeley aasmaan ko kuch qareeb se dekhna chahta tha. Uski aisi baatein baaqi maindako ko humesha mazaq he lagti thi par usey yaqeen tha k wo kuch kar sakta hai. Us k dil mein humesha yeh khayal aata tha k is kunwein se aagey bhi kuch hai. Kuch bara aur kuch behtar. Baaqi maindak yeh baat kabhi nahi samjh paatey they. 
Isi tarah yeh maindak kisi din akaila baitha apney kunwein ko behtar banaaney ki tarqeebein soch raha tha k achanak bahar se aik maindak kunwein me aa gira. Poochney par pata chala k wo maindak bahar ki dunya se aaya hai. Sab ne pehley to maanney se inkaar kr diya k kunwein k bahar ki bhi koi dunya hai. Un k mutaabiq kunwa he unki dunya thi. Us se bara aur behtar kuch nahi ho skta. Baaqi sab ne maanney se saaf inkaar kr diya par is maindak ko bahar ki dunya ka sunn kr bohhat khushi hui. Usey khud par yaqeen ho gaya. Usey apna aap yukdum baaqi maindako se behtar lagney laga. 
Bahar se aaye huey maindak se sab maindak bohhhat din dunya k barey me tarah tarah k sawal krtey rhey taakey us dunya ko behtar tareeqey se jaan skein. Baaqi maindako ko phir bhi yaqeen na aaya k itni roshan aur bari jagah bhi koi ho skti hai magar is maindak ko ajeeb si fatah ka ahsas honey laga. Usko bahar ki dunya kuch kuch apni tasawuraati dunya k qareeb qareeb lagney lagi. Usey bohhat khushi hui k usk khwab haqeeqat se bohhat qareeb hein. Usey apni qaabliyyat pr aur yaqeen hogya. Usney jese khud ko pehchaan liya ho.
Bahar ki dunya ka maindak to kunwa chor kr chala gaya pr is kunwein k maindak ko wo pehley se kahi zyada beychain kr gaya. Ab usne khwab dekhney se zyada yeh sochna shuru kr diya k wo kyu us bahar ki dunya ka hissa nahi hai. Wo kyu us kunwein me rehta hai? Usme aisi kiya kami hai jo wo bahar ki roshan aur purr ronak dunya ka hissa nahi bun skta aur wo bahar se aaney wala maindak kis tarah us se behtar tha. Uski zindagi mazeed beychain ho gai aur isi tarah kunwein k maindak ne us dunya ko qareeb se jaanchney ka faisla kr liya jo uski tasawuraati dunya se bohhat hudd tak qareeb thi…

Urdu Text Courtesy: Rai M. Azlan

7 comments:

  1. بے چارہ کنویں کا مینڈک یہ نہیں جانتا کہ وہ جہاں ہے وہان کتنا امن ہے۔ اور جہاں جانا چاہتا ہے واھان کیتنی قتل و غارت، جھوٹ فریب، دھوکا ہے۔ انسان تہ لا تعداد ہیں پر انسانیت نہیں ہے۔

    ReplyDelete
  2. Thanks to my relatively weaker grasp of Urdu/Hindustani, i couldn't get some of the words but i managed to gather the gist: rise against ignorance.

    Nice job.

    ReplyDelete
  3. 'Justuju jis ki thi usko tau na paaya hum nay,
    Isi bahanay say dekh li magar duniya hum nay..!'

    Kunwaein k maindak ka anjaam yehe hai! :)

    ReplyDelete
  4. bohat aala ..

    ReplyDelete
  5. There are many manufacturers which might be making antiaging vitamins, but product Looks can claim that a woman has humid youthful by
    following the following tips! Thus, a good wrinkle cream must order lifecell very
    in value. [url=http://efacecream.com]lifecell cream[/url] Acquiring a lot of slumber is important for people
    planning to delay the fermentation http://efacecream.
    com it is definitely a better expense if you do buy one
    which does.

    ReplyDelete
  6. Sara,

    Eid Mubarak. May God bless you with whatever you wish.

    Take care

    PS : Wish I could send an e-card! Will come back later to read pending posts as I am not keeping too well.

    ReplyDelete